پیراگون کیس؛ خواجہ برادران 10 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے

لاہور: پیراگون سوسائٹی کیس میں احتساب عدالت نے خواجہ برادران کو 10 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کردیا۔

سابق وزیر ریلوے سعد رفیق اور ان کے بھائی سلمان رفیق کو پیراگون سوسائٹی کیس میں احتساب عدالت میں پیش کیا گیا، خواجہ برادران کے وکیل امجد پرویز نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ تحقیقات 6 مارچ 2018 کو شروع ہوئی، تمام تر مطلوبہ دستاویزات بھی نیب کو دے دی گئیں، خواجہ برادران متعدد بار نیب کے سامنے پیش ہوئے اور کسی طلبی سے غیرحاضر نہیں رہے۔

سماعت کے موقع پر نیب کے تفتیشی افسر نے کہا کہ پیراگون ناجائز سوسائٹی ہے، یہ ایل ڈی اے سے منظور شدہ نہیں ہے، ایگزیکٹیو بلڈرز نامی فرم سے 100 ملین خواجہ برادران کے اکاونٹس میں آئے ہیں، قیصر امین بٹ روپوش ہو گیا تھا، ہمیں پیراگون کا ریکارڈ نہیں مل سکا، کاغذات میں پیراگون کی زمین 7 ہزار کینال تھی لیکن ریونیو کے ریکارڈ میں پیراگون کے پاس صرف 11 سو کینال جگہ نکلی۔

نیب نے عدالت سے تحقیقات کے لیے خواجہ برادران کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی جو عدالت نے منظور کرتے ہوئے سعد رفیق اور سلمان رفیق کو 22 دسمبر تک جسمانی ریمانڈ پر نیب کی تحویل میں دیدیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں